ذرائع کے مطابق ائیر بس ماہرین کی ٹیم نے آج بھی جائے حادثہ کا دورہ کیا اور شواہد اکٹھا کیے جہاں ماہرین کو طیارے کا کاک پٹ وائس ریکارڈر بھی ملا۔

ترجمان پی آئی اے نے کاک پٹ وائس ریکارڈر ملنے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ صبح نئے سرے سےکاک پٹ وائس ریکارڈرکی تلاش شروع کی گئی تھی جو جہاز کے ملبے کے نیچے سے ملا۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ کاک پٹ وائس ریکارڈر طیارہ حادثے کے تفتیشی بورڈ کے حوالے کردیا گیا ہے جس سے تحقیقاتی عمل میں بہت مدد ملے گی۔

ذرائع کے مطابق کاک پٹ وائس ریکارڈر کی تلاش کے لیے پی آئی اے انجینئرنگ ،ٹیکنیکل گراؤنڈ سپورٹ اور سی اے اے ویجلنس کی خدمات بھی حاصل کی گئیں۔

دوسری جانب جائے حادثہ پر عمارتوں کی خصوصی انسپیکشن کا ٹاسک بھی تحقیقاتی ٹیم کودے دیا گیا ہے۔

ائیربس کی ٹیم جہاز گرنے کے مقام سے لے کر رن وے تک تحقیقات کو جاری رکھے ہوئے ہے جب کہ جائے حادثہ سے ائیرپورٹ منتقل کیے گئے ملبے سے مذید شواہد اکٹھا کیے جارہے ہیں۔

آج ٹیم کنٹرول ٹاور، اپروچ اور ریڈار کنٹرول کا دورہ کیا جائے گا، سول ایوی ایشن ہیڈ کوارٹر اور پی آئی اے ہیڈ آفس میں بھی غیرملکی ماہرین کو خصوصی بریفنگ دی جائے گی۔

یاد رہے کہ 22 مئی کو پی آئی اے کا لاہور سے کراچی آنے والا طیارہ رن وے سے چند سیکنڈ کے فاصلے پر آبادی پر گر کر تباہ ہوگیا تھا جس کے نتیجے میں جہاز کے عملے سمیت 97 افراد جاں بحق جب کہ دو افراد معجزانہ طور پر بچ گئے تھے۔

The cockpit voice record of the crashed plane was found  حادثے کا شکار طیارے کا کاک پٹ وائس ریکارڈ مل گیا 23 300x200

Sharing is caring share post