این سی او سی کا 9مئی کے بعد کی صورتحال کا جائزہ لینے کے لئے اہم اجلاس ہوا جس میں صوبائی چیف سیکرٹریز نے اپنے صوبوں اور علاقوں میں انسداد کورونا وائرس (کووڈ 19) کی گائیڈ لائنز پر عمل درآمد کے حوالے سے فورم کو پیش رفت سے آگاہ کیا۔

این سی او سی کو بتا یا گیا ہے کہ عید کی وجہ سے بازاروں میں رش برھ گیا ہے، عوام کی سہولت کے لیے لاک ڈاؤن میں نرمی کی گئی ہے لیکن وبا کے پھیلنے کا خطرہ بدستور موجود ہے، حفاظتی ایس او پیز پر عمل درآمد یقینی بنایا جائے۔

وفاقی وزیر اسد عمر نے کہا کہ انسداد کورونا وائرس ایس او پیز تمام صوبوں کو بھجوائی گئی ہیں، ریڈیو، ٹی وی چیلنز، سوشل میڈیا سمیت ہر ڈجٹیل پلیٹ فارم کے ذریعے مؤثر عوامی آگاہی مہم بھی چلائی گئی۔

اسد عمر کا کہنا تھا کہ صنعتوں اور تعمیراتی شعبے سے متعلق پروٹوکول، مارکیٹوں سمیت ہر شعبے کے لیے جامع ایس او پی بنائی گئی ہیں اور عوام ان سے مکمل آگاہ ہیں۔

وفاقی وزیر نے تمام صوبوں کے چیف سیکرٹریز کو ہدایت کی کہ صوبے ایس او پیز پر عمل درآمد کو یقینی بنا کر عوام کی صحت اور حفاظت کو یقینی بنانے کے لیے اپنا بھرپور کردار ادا کریں تاکہ وبا کا مزید پھیلاؤ روکا جاسکے۔

انہوں نے کہا کہ چیف سیکرٹریز تین سے چار روز میں طے شدہ ایس او پیز پر 100فیصد عمل درآمد یقینی بنائیں تاکہ وبا کا مزید پھیلاؤ رک سکے۔

اسد عمر کا کہنا تھا کہ انفرادی ذمہ داری ہی اجتماعی صحت، تحفظ اور کووڈ 19 سے بچاؤ کا واحد ذریعہ ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ 9مئی کے بعد عوام کی ذمہ داری ہے کہ وہ تمام ایس او پیز پر عمل کر کے اپنے سے منسلک افراد، خاندان، معاشرے اور کمیونٹی کی صحت کا خیال رکھیں۔

Individual responsibility is the only way to avoid health and code 19  انفرادی ذمہ داری ہی صحت اور کووڈ 19 سے بچاؤ کا واحد ذریعہ 1 1 300x200

Sharing is caring share post

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here