Infectious Diseases Amendment Act enacted to prevent coronary outbreaks

اپنے ایک ویڈیو بیان میں حکومت سندھ کے ترجمان مرتضیٰ وہاب نے بتایا کہ گورنر سندھ عمران اسماعیل کی منظوری کے بعد سندھ بھر میں وبائی امراض ترمیمی ایکٹ نافذ ہوگیا ہے جس پر عمل کرنا شہریوں، دکانداروں، فیکٹری مالکان اور ہر فرد کے لیے لازم ہے۔

مرتضیٰ وہاب نے کہا کہ ہر ایک کے لیے ضابطہ کار پر عمل کرنا لازمی ہو گا اور جو کوئی بھی اس کی خلاف ورزی کرے گا اسے 10 لاکھ روپے تک کا بھاری جرمانہ ادا کرنا ہو گا۔

ان کا کہنا ہے کہ سندھ حکومت کورونا وائرس کی روک تھام کے لیے سنجیدہ اقدامات کر رہی ہے اور قانون نافذ کرنے کا مقصد شہریوں میں احتیاطی تدابیر پر عملدرآمد کا شعور پیدا کرنا ہے۔

انھوں نے بتایا کہ سماجی فاصلہ، ماسک کا استعمال، کارخانوں اور مارکیٹوں کے پر اس قانون کا اطلاق ہو گاجب کہ یہی قانون اجتماعات، مذہبی و سماجی تقاریب، لاک ڈاؤن کی پابندیوں پر بھی لاگو ہوگا، پابندی والے کاروبار کھولنے پر بھی یہ قانون حرکت میں آئے گا۔

ترجمان سندھ حکومت مرتضیٰ وہاب کا کہنا تھا کہ ہم سب نے وبائی امراض ترمیمی ایکٹ پر عمل کرنا ہے، آئیے اس وبا کے خاتمے کے لیے قانون پسند شہری ہونے کا ثبوت دیں۔

واضح رہے کہ لاک ڈاؤن میں نرمی کے بعد کراچی سمیت صوبے بھر کی مارکیٹوں میں شہریوں کی بڑی تعداد نے رخ کر لیا ہے اور اس دوران ماسک، دستانے، سینی ٹائزر اور سماجی فاصلے سمیت دیگر احتیاطی تدابیر کو نظر انداز کیا جا رہا ہے جب کہ والدین کے ساتھ بچے بھی بازاروں میں نظر آ رہے ہیں۔

خیال رہے کہ ملک میں روز بروز کورونا کیسز کی تعداد میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے، اب تک متاثرین کی تعداد 38 ہزار سے تجاوز کر گئی ہے جس میں سے 14 ہزار 969 کا تعلق سندھ سے ہے جب کہ صوبے میں 255 اموات بھی ہو چکی ہیں۔

Infectious Diseases Amendment Act enacted to prevent coronary outbreaks  کورونا پھیلاؤ روکنے کیلئے وبائی امراض ترمیمی ایکٹ نافذ العمل 8 300x193

Sharing is caring share post