PIC Lawyers  وکلاء کے تشدد کے بعد عوام کا غصہ ٹھنڈا نہ ہو سکا 2

وکلاء کے تشدد کے بعد عوام کا غصہ ٹھنڈا نہ ہو سکا

وکلاء کے تشدد کے بعد عوام کا غصہ ٹھنڈا نہ ہو سکا
عوام شدید غصے میں سوشل میڈیا میں عوام نے اپنے غصے کا اظہار کیا اکثر کی رائے تھی کہ تمام وکلا کا لائسنس منسوخ کیا جائے اور ان کو کڑی سے کڑی سزا دی جائے
ذلت عوام کی ہمدردیاں ڈاکٹر کے ساتھ تھی انہوں نے وکلاء کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ یہ قانون دان ہیں بلکہ قنون فقدان ہیں
سوشل میڈیا پہ سروے ہوتا رہا کہ حکومت کو اب وکلاء کے خلاف کونسا قدم اٹھانا چاہیے
اکثر لوگوں کا کہنا تھا کہ حکومت کو وکلاء کے خلاف سخت سے سخت کاروائی کرنی چاہیے تاکہ آئندہ کل اس طرح کا کوئی بھی قدم اٹھائیں
پی آئی سی کے باہر جو وکلاء گرفتار ہوئے عوام نے دھلائی کر دی


وکیلوں کا ہسپتال پہ حملے کا کیس کونسی عدالتوں میں سننا چاہیے ؟


Sharing is caring share post