طارق عزیز کی جائیداد کا کیا بنے گا ؟

0
9

آج پاکستان کے مشہور صحافی، ٹی وی ہوسٹ، ادیب شاعر، سیاستدان طارق عزیز انتقال کر گئے ہیں، طارق عزیر کے انتقال کی خبر نے پاکستان کے ہر شعبہ زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد کو رنجیدہ کر گئی، طارق عزیز کی نماز جنازہ آج گارڈن ٹاؤن میں شام ساڑھے 7 بجے ادا کی

جائے گی ۔ طارق عزیز کے انتقال کی خبر نے سوشل میڈیا، قوم میڈیا پر بھونچال پیدا کر دیا اور انکی زندگی کے حوالے سے ناقابلِ یقین کہانیاں سامنے آنا شروع ہوگئی، سوششل میڈیا پر ایک صارف نے طارق عزیز مرحوم کے بارے میں لکھا کہ ‏ ’’ طارق عزیز مرحوم کی کوئی اولاد نہیں تھی…ان کی وصیت کے مطابق انہوں نے اپنی تمام جائیداد “ریاستِ پاکستان” کے نام وقف کر دی تھی‘‘۔

خیال رہے کہ طارق عزیز پی ٹی وی کے سب سے پہلے مرد
اناؤنسر تھے۔طارق عزیز نے کئی فلموں میں بھی اداکاری کی ۔انہوں نے 60 اور 70 کی دہائی میں کئی فلموں میں اداکاری کی۔انہوں نے ریڈیو پاکستان سے کیرئیر کا آغاز کیا۔پی ٹی وی کا خبر نامہ پڑھنے والے پہلے اینکر ہونے کا اعزاز بھی طارق عزیز کوحاصل ہے۔طارق عزیز پی ٹی وی کے کوئز شو نیلام گھر کی وجہ سے جانے جاتے تھے۔جو 1974 میں نشر ہوا تھا ، بعد میں اس کا نام بدل دیا گیا۔ان کے پروگرام کا نام طارق عزیز شو اور بعد میں بزم طارق عزیز کے نام سے جانا جاتا تھا۔وہ 1997 سے 1999 کے درمیان پاکستان کی قومی اسمبلی کے رکن بھی رہ چکے ہیں۔طارق عزیز کے انتقال کی خبر سے مداحوں کو شدید صدمہ پہنچا ہے جب کہ شوبز انڈسٹری اور دیگر شخصیات بھی ان کے انتقال پر افسوس کا اظہار کر رہے ہیں۔طارق عزیز کی وفات پر تعزیت کرتے ہوئے معروف اداکار جاوید شیخ نے ان کے بلند درجات کے لیے دعا کی. علاوہ ازیں معروف اداکار بہروز سبزواری نے طارق عزیز کو انے اساتذہ میں سے ایک قرار دیا اور کہا کہ ان کو پی ٹی وی کی پہلی اناﺅنسمنٹ کا اعزاز حاصل تھاان کا مزید کہنا تھا طارق عزیز کی شخصیت بہت ہما جہت تھی اور ان کا کوئی متبادل نہیں ان کی وفات سے بہت بڑا خلا پیدا ہوگیا. بہروز سبزواری نے بھی ان کے بلند درجات اور مغفرت کی دعا کی اور کہا کہ ایک سفر کے دوران وہ میرے ہمراہ تھے جب انہوں نے بہت سی آیات ترجمے کے ساتھ بتائیں.

Sharing is caring share post